امریکی محکمہ خارجہ
ترجمان کا دفتر
26 جنوری، 2024

امریکہ کو ان الزامات پر بے حد تشویش ہے کہ ‘انرا’ کے بارہ اہلکار اسرائیل پر 7اکتوبر کو کیے جانے والے دہشت گرد حملوں میں مبینہ طور پر ملوث ہیں۔ محکمہ خارجہ نے ‘انرا’ کے لیے مزید مالی وسائل کی فراہمی عارضی طور پر روک دی ہے۔ اس دوران ہم ان الزامات اور ان پر کارروائی کے لیے اقوام متحدہ کے اقدامات کا جائزہ لے رہے ہیں۔

وزیر خارجہ اینٹنی جے بلنکن نے 25 جنوری کو اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل انتونیو گوتیرس سے بات کی۔ اس موقع پر انہوں نے اس معاملے کی مکمل اور فوری تحقیقات پر زور دیا۔ ہم ایسی تحقیقات شروع کرنے کے فیصلے اور الزامات درست ثابت ہونے کی صورت میں فیصلہ کن قانونی کارروائی کے لیے سیکرٹری جنرل انتونیو گوتیرس کے وعدے کا خیرمقدم کرتے ہیں۔ ہم اقوام متحدہ کی جانب سے انرا کے ‘جامع اور غیرجانبدارانہ’ جائزے کے اعلان کو بھی سراہتے ہیں۔ 7 اکتوبر کے وحشیانہ حملوں میں ملوث ہر ایک کا مکمل محاسبہ ہونا چاہیے۔

‘انروا’ فلسطینیوں کو زندگیاں بچانی والی امداد فراہم کرتا ہے جس میں انتہائی ضروری خوراک، ادویات، پناہ اور دیگر اہم انسانی امداد شامل ہے۔ اس کے کام کی بدولت زندگیوں کو تحفظ ملا اور اس کے ان الزامات کی تحقیقات کرنے اور اپنی موجودہ پالیسیوں اور طریقہ ہائے کار کا جائزہ لینے سمیت معاملات کو درست کرنے کے اقدامات اٹھانا بہت ضروری ہے۔

امریکہ نے ان الزامات سے متعلق مزید معلومات حاصل کرنے کے لیے اسرائیل کی حکومت سے رابطہ کیا ہے۔ ہم اس حوالے سے اقوام متحدہ اور اسرائیل کی حکومت کے ساتھ قریبی رابطے میں رہیں گے۔


اصل عبارت پڑھنے کا لنک: https://www.state.gov/statement-on-unrwa-allegations/

یہ ترجمہ ازراہ نوازش فراہم کیا جا رہا ہے اور صرف اصل انگریزی ماخذ کو ہی مستند سمجھا جائے۔

U.S. Department of State

The Lessons of 1989: Freedom and Our Future